‘ہم ہندوستان کے ساتھ باہمی تعلقات چاہتے ہیں’ عمران خان

وزیر اعظم عمران خان نے بدھ کو ناروال ضلع کے کرتارپور علاقے میں گورڈاس پور ضلع کے ڈیرہ ب باب نانک میں گڑھارا دربار صاحب سے منسلک طویل عرصے سے انتظار کی کوریڈور کی بنیاد پر کام کیا.

سکھ یاتری کی ایک بڑی تعداد ─ دونوں مقامی اور بھارتی ─ دونوں کے ساتھ ساتھ بھارتی وزیر فوڈ ہارسرترت کور بادل اور ہاؤسنگ ہنگو ایسوری وزیر، مقامی پنجابی مقامی حکومت، سیاحت، ثقافتی معاملات اور میوزیم کے نیویارک نیویجٹ سنگھ سدھو، اور بھارتی صحافیوں اور غیر ملکی سفارتکاروں نے تقریب میں شرکت کی.

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی، پنجاب کے وزیر اعلی عثمان بزز، ریلوے وزیر شیخ رشید، داخلہ کے وزیر داخلہ شریری آفریدی، مذہبی امور کے وزیر نورالحق قادری اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ بھی تھے.

سکھ یاتریوں کے لئے پیش کردہ سہولیات

ایونٹ کے آغاز میں، حاضریوں کو اس اقدامات کے بارے میں بتایا گیا تھا جو سکھ یاتریوں کو سہولت دینے کے لئے کئے جائیں گے جنھیں گوردوارا داربار صاحب کا دورہ کرنا تھا.

حکومت نے اعلان کیا کہ اگلے سال اگلے سال بابا گرو ناناک کی 550 ویں سالگرہ پر چار کلومیٹر طویل ویزا فری کوریڈور کھولنے کا مقصد ہے.

منصوبے کے پہلے مرحلے میں، نومبر 2019 سے پہلے مکمل ہونے کا فیصلہ کیا گیا ہے، سرحد کے قریب ایک بورڈنگ ٹرمینل قائم کیا جائے گا. ٹرانسپورٹ کا اہتمام کیا جارہا ہے. اس مقصد کے لئے دریائے روی میں ایک 800 میٹر طویل پل بھی تعمیر کیا جائے گا. اس کے علاوہ، اس مرحلے میں 10،000 حاجیوں کے لئے رہائش کی سہولتیں بھی کی جائیں گی.

دوسرے مرحلے میں، ہوٹلوں اور دیگر رہائشی سہولیات کو ویزا پہنچنے والے حاجیوں کو تعمیر کرنے کے لئے تعمیر کیا جائے گا. سرحد سے شروع ہونے والے ایک 300 میٹر ٹریک کو یاتریوں کے لۓ خصوصی اجازت دی جاسکتی ہے، جس کے بعد سرحدی ٹرمینل سے 4.5 کلومیٹر سڑک بھی گڑوڑ تک تعمیر کی جائے گی. وہاں سے، یاتریوں کو پاؤں یا گاڑیوں میں سفر کرنے کے قابل ہو جائے گا.

سرحدی ٹرمینل میں امیگریشن، پارکنگ اور طبی سہولیات، ایک ٹکر کی دکان، ایک سوویئر کی دکان اور دیگر سہولیات موجود ہوں گے.

ان اجازتوں کو حاصل کرنے کے بعد، خصوصی نقل و حمل حاجیوں کو گورڈورا کے قریب ایک پارکنگ علاقے میں لے جائے گی. حجاج کی حفاظت کو یقینی بنانے کے لئے حفاظتی پیغامات قائم کیے جائیں گے. جب یاتری پارکنگ تک پہنچے تو، ان کی شناختی کے بایو میٹرک کی توثیق کی جائے گی، اور پھر وہ گرودوارا کے احاطے میں داخل ہو جائیں گے اور مخصوص وقت کے اندر آزادانہ طور پر عبادت کریں گے.
ذرائع

43 total views, 1 views today

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *